Breaking News
Home / Uncategorized / Jo Mera Dost Bhi Hai, Mera Humnawa Bhi Haiجو میرا دوست بھی ہے میرا ہم نوا بھی ہے

Jo Mera Dost Bhi Hai, Mera Humnawa Bhi Haiجو میرا دوست بھی ہے میرا ہم نوا بھی ہے

جو میرا دوست بھی ہے میرا ہم نوا بھی ہے
وہ شخص صرف بھلا ہی نہیں بُرا بھی ہے

میں پُوجتا ہُوں جِسے اُس سے بے نیاز بھی ہُوں
میری نظر میں وہ پتھر بھی ہے خُدا بھی ہے

سوال نیند کا ہوتا تو کوئی بات نہ تھی
ہمارے سامنے خوابوں کا مسلہ بھی ہے

جواب دے نہ سکا اور بن گیا دشمن
سوال تھا کہ تیرے گھر میں آئینہ بھی ہے

ضرور وہ میرے بارے میں رائے دے لیکن
یہ پُوچھ لینا کبھی مُجھ سے وہ ملا بھی ہے

Jo Mera Dost Bhi Hai, Mera Humnawa Bhi Hai
Wo Shakhs, Sirf Bhala Hi Nahi, Bura Bhi Hai

Main Poojta Hoon Jise, Us Se Benyaaz Bhi Hoon
Meri Nazar Main Wo Paththar Bhi Hai Khuda Bhi Hai

Swaal Neend Ka Hota To Koi Baat Na Thi
Hamaare Saamne Khwaabon Ka Massala Bhi Hai

Jawaab De Na Saka, Aur Ban Geya Dushman
Sawaal Tha, Ke Tere Ghar Main Aaina Bhi Hai

Zaroor Wo Mere Baare Me Raaye Day Lekin
Ye Poochh Lena Kabhi Mujhse Wo Mila Bhi Hai

About Rahat Indori

Rahat Indori

Check Also

Intezamaat Naye Sire Say Sambhaale Jaainاِنتظامات نئے سرے سے سنبھالے جائیں

اِنتظامات نئے سرے سے سنبھالے جائیں جتنے کم ظرف ہیں محفل سے نکالے جائیں میرا …