Breaking News
Home / Uncategorized / Intezamaat Naye Sire Say Sambhaale Jaainاِنتظامات نئے سرے سے سنبھالے جائیں

Intezamaat Naye Sire Say Sambhaale Jaainاِنتظامات نئے سرے سے سنبھالے جائیں

اِنتظامات نئے سرے سے سنبھالے جائیں
جتنے کم ظرف ہیں محفل سے نکالے جائیں

میرا گھر آگ کی لپٹوں میں چُھپا ہے لیکن
جب مزہ ہے تیرے آنگن میں اُجالے جائیں

غم سلامت ہے تو پیتے ہی رہیں گے لیکن
پہلے مے خانے کے حالات سنبھالے جائیں

خالی وقتوں میں کہیں بیٹھ کے رو لیں یارو
فرصتیں ہیں تو سمندر ہی کھنگالے جائیں

خاک میں یُوں نہ مِلا ضبط کی توہین نہ کر
یہ وہ آنسُو ہیں جو دُنیا کو بہا لے جائیں

ہم بھی پیاسے ہیں یہ احساس تو ہو ساقی کو
خالی شیشے ہی ہواؤں میں اُچھالے جائیں

آؤ شہر میں نئے دوست بنائیں راحت
آستینوں میں چلو سانپ ہی پالے جائیں

Intezamaat Naye Sire Say Sambhaale Jaain
Jitne Kamzarf Hain Mehfil Se Nikaale Jaain

Mera Ghar Aag Ki Lapton May Chhupa Hai Lekin
Jab Maza Hai Tere Aangan May Ujaale Jaain

Gham Salaamat Hai To Peetay Hi Rahain Ge Lekin
Pehlay Maikhane Ke Halaat Sambhaale Jaain

Khali Waqton Main Kahin Baith Ke Ro Lain Yaaro
Fursatain Hain To Samandar Hi Khangaale Jaain

Khak May Yun Na Mila Zabt Ki Tauheen Na Kar
Ye Wo Aansu Hain Jo Duniya Ko Baha Le Jaain

Ham Bhi Pyaasay Hain Ye Ehasas To Ho Saaqi Ko
Khali Sheeshay Hi Hawaaon May Uchhaale Jaain

Aao Shahar Main Naye Dost Banaain Rahat
Astinon Main Challo Saanp Hi Paale Jaain

About Rahat Indori

Rahat Indori

Check Also

Jo Mera Dost Bhi Hai, Mera Humnawa Bhi Haiجو میرا دوست بھی ہے میرا ہم نوا بھی ہے

جو میرا دوست بھی ہے میرا ہم نوا بھی ہے وہ شخص صرف بھلا ہی …