Breaking News
Home / Uncategorized / Andar Ka Zahar Choom Liya, Dhul Ke Aa Gayeاندرکا زہر چُوم لیا، دھُل کے آ گئے

Andar Ka Zahar Choom Liya, Dhul Ke Aa Gayeاندرکا زہر چُوم لیا، دھُل کے آ گئے

اندرکا زہر چُوم لیا، دھُل کے آ گئے
کِتنے شریف لوگ تھے سب کُھل کے آ گئے

سُورج سے جنگ جیتنے نِکلے تھے بیوقُوف
سارے سِپاہی موم کے تھے گُھل کے آ گئے

مسجِد میں دُور دُور کوئی دُوسرا نہ تھا
ہم آج اپنے آپ سے مِل جُل کے ‌گئے

نیندوں سے جنگ ہوتی رہے گی تمام عُمر
آنکھوں میں بند خواب اگر کُھل کے آ گئے

سُورج نے اپنی شکل بھی دیکھی تھی پہلی بار
آئینے کہ مزے بھی مُقابِل کے آ گئے

انجانے سائے پِھرنے لگے ہیں اِدھر اُدھر
موسم ہمارے شہر میں قابُل کے آ گئے

Andar ka zahar choom liya, dhul ke aa gaye
Kitne sharif log the sab khul ke aa gaye

Suraj se jang jeetney nikale thhe bevakuf
saare sipahi mom ke the ghul ke aa gaye

Masjid mai dur dur koi dusraa na thha
Hum aaj apne aapse mil jul ke aa gaye

Neendo se jang hoti rahegi tamaam umra
aankho mai band khwaab agar khul ke aa gaye

Suraj ne apni shakl bhi dekhi thi pehli baar
Aaine ko maze bhi mukaabil ke aa gaye

Anjaane saaye firne lage hain idhar udhar
Mausam hamare shahar mai kaabul ke aa gaye

About Rahat Indori

Rahat Indori

Check Also

Jo Mera Dost Bhi Hai, Mera Humnawa Bhi Haiجو میرا دوست بھی ہے میرا ہم نوا بھی ہے

جو میرا دوست بھی ہے میرا ہم نوا بھی ہے وہ شخص صرف بھلا ہی …

Leave a Reply

Your email address will not be published.